پاکستان تحریک انصاف کی ایم پی اے سیما ضیا نے عمران خان کے قریبی ساتھی جہانگیر ترین کے بارے میں ایسا کیا کہہ ڈالا کہ بڑی مشکل میں گرفتار ہو گئیں

پاکستان تحریک انصاف کو حکومت میں آتے ہی انتہائی سخت اور تجربہ کار اپوزیشن کا سامنا کرنا پڑا جب کہ دوسری جانب تحریک انصاف کے زیادہ تر افراد وہ ہیں جو پہلی بار اسمبلی میں آے ہیں لہذا ان کو اس کی کاروائي کے حوالے سے کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے پاکسان تحریک انصاف کی ایم پی اے سیما ضیا جو کہ سندھ اسمبلی میں گزشتہ دور میں بھی پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹ پر رکن قومی اسمبلی رہ چکی ہیں ایسی ہی مشکل کا شکار ہو گئیں

رکن سندھ اسمبلی سیما ضیا صاحبہ جب تقریر کے لیۓ کھڑی ہوئيں تو ان کا موضوع بحث سندھ حکومت کے مختلف شعبہ جات میں کرپشن اور اس کی کرپٹ انتظامیہ پر تنقید تھی مگر بدقسمتی سے ان کی تقریر سے ایک دن قبل ہی پاکستان تحریک انصاف کے سابق جنرل سیکریٹری جہانگیر ترین کی سپریم کورٹ میں اپیل کا بھی فیصلہ آیا ہوا تھا

جس کا شور اسمبلی مین بار بار اٹھ رہا تھا اور حکومتی ارکان نے سیما ضیا کی تقریر کے دوران بار بار جہانگیر ترین کے کرپشن کے سب نااہلی کا حوالہ دیا جس کے سبب سیما ضيا جزباتی ہو گئیں اور انہوں نے اسی جزباتی انداز مین یہ کہہ ڈالا

بہت اچھا ہوا جہانگیر ترین کے ساتھ جو جو ملک مین کرپشن کرۓ گا اس کے ساتھ یہی ہونا چاہیۓ جو جو ملک مین کرپشن کرۓ گا اس کے ساتھ ایسا ہی ہونا چاہیۓ

اپنی اس دھواں دھار تقریر کے بعد سیما ضیا اسمبلی مین نہیں رکیں بلکہ واک آوٹ کر گئيں ان کی اس تقریر نے ایک جانب تو ان کے ساتھیوں کے چہروں کو دھواں دھواں کر ڈالا جب کہ دوسری جانب حکومتی ارکان اپنے وار کے کارگر ہونے پر مسکراۓ بغیر نہ رہ سکے

دوسری طرف سیما ضیا نے باہر آتے ہی میڈیا کے سامنے یو ٹرن لے لیا ان کا یہ کہنا تھا کہ جہانگیر ترین ان کے لیۓ انتہائی قابل احترام ہیں اور انہوں نے جو بو لا غلط بولا وہ اپنا بیان واپس لیتی ہیں یاد رہے کہ سیم ضیا کے بولے گۓ جملے سندھ اسمبلی کی کاروائی کا حصہ جن چکے ہین اور حزف نہیں ہو سکتے ہیں