صبا قمر عروسی لباس پہن کو باتھ ٹب میں کیوں جا بیٹھیں ؟ وجہ جانیۓ

صبا قمر عروسی لباس پہن کو باتھ ٹب میں کیوں جا بیٹھیں ؟ وجہ جانیۓ

صبا قمر دن بدن نکھرتی جا رہی ہیں ان کی خوبصورتی ان کی کشش جتنی تیزی سے بڑھ رہی ہے اتنی ہی تیزی سے ان کےچاہنے والوں میں اضافہ بھی دیکھنے میں آرہا ہے ۔ شو بز سے جڑے لوگوں کو خبروں میں رہنے کے لیۓ مختلف ہسارے استعمال کرنے پڑتے ہیں مگر صبا قمر کی تو صرف تصویریں ہی ان کو خبروں کا مرکز بنا ڈالتی ہیں

ان کی تصویریں اس تبدیلی کا اظہار کر رہی ہوتی ہیں جو اس اداکارہ کی شخصیت میں وقت کے ساتھ ساتھ آتی جا رہی ہے ۔ گزشتہ دنوں صبا قمرنے فلم پدماوتی کے آفیشل ڈیزائنر کے ڈیزائن کردہ ملبوسات پہن کر ان کی نمائش اس بہترین انداز میں کی کہ لوگ بے ساختہ ان کا موازنہ پدماوتی کی ہیروئين دپیکا سے کرنے لگے ۔

اس کے بعد صبا قمر کی ہالی وڈ کی فلم سائن کرنے کی خبر نے ان کو سب کا مرکز نگاہ بنا دیا اس موقع پر صبا قمر نے بولڈ مغربی لباسوں میں جو تصویریں اپنے سوشل میڈیا اکاونٹ سے شئیر کیں ان کو ان کے چاہنے والوں کی جانب سے کافی تنقید کا نشانہ بنایا گیا ۔

اس کے بعداب جو تصویریں سامنے آئی ہیں ان میں بظاہر تو عریانیت کا پہلو کہیں بھی نظر نہیں آرہا ہےخوبصورت عروسی لباس میں صبا قمر ہمیشہ سے زیادہ خوبصورت نظر آرہی ہیں ان کو دیکھ کر دل نے دھڑکنا بند کر دیا ہونٹ جامد رہ گۓ اور نظر بس ان پر ٹک گئی اس نے ان کے چہرے پر سے ہٹنے سے انکار کر دیا

بقول شاعر ،   اس کے چہرے کی چمک کے سامنے سادہ لگا 

                                 آسماں پہ چاند پورا تھا مگر آدھا لگا 

اس تصویر میں تو  حسن بے خودی نے دیکھنے والے کو اس طرح دیوانہ کر دیا کہ بے ساختہ کہہ اٹھے

جس بھی فنکار کا شاہکار ہو تم 

                               اس نے صدیوں تمھیں سوچا ہو گا 

صبا قمر کی تصویروں نے دیکھنے والے کو اس طرح مبہوت کر دیا ہے کہ اس کو لگتا ہے کہ وقت تھم سا گیا ہے

جتنا دیکھو اس کو تھکتی نہیں ہیں آنکھیں ورنہ 

                                ختم ہو جاتا ہے ہر حسن کہانی کی طرح 

اس کے بعد باتھ ٹب میں موجود یہ تصاویر دیکھ کر دل بے ساختہ کہہ اٹھا

 آستیں اس نے جو کہنی تک چڑھائی وقت صبح 

                           آرہی سارے بدن کی بے حجابی ہاتھ میں 

صبا قمر کی خوبصورتی اور نکھرتا رنگ و روپ ما ئرہ خان کی طرح ان کو شہرت اور کامیابیوں کی بلندیوں کی جانب لے جا رہا ہے اب دیکھنا یہ ہے کہ آنے والا وقت ان کے نصیب میں کیا لیۓ بیٹھا ہے

 

To Top