ریحام خان عمران خان کے بلیک بیری فون کے اسکرین شاٹ سامنے لے آئيں کون کون سے پردہ نشین بے نقاب کر دیۓ جانیۓ

ریحام خان عمران خان کے بلیک بیری فون کے اسکرین شاٹ سامنے لے آئيں کون کون سے پردہ نشین بے نقاب کر دیۓ جانیۓ

عمران خان اور ریحام خان کو  پاکستان کااس صدی کا سب سے زیادہ زیر بحث رہنے والا جوڑا کہا جاۓ تو غلط نہ ہو گا اس جوڑے کی شہرت اس کی طلاق کے سبب مذید بڑھ گئی گزشتہ آدھ ماہ سے اس جوڑے کی شہرت میں مذید اضافہ پہلے تو ریحام خان کی کتاب کے منظر عام پر آنے کے شور کے سبب تھا

اس کے بعد جب کتاب سامنے آئی تو اس میں موجود وہ تمام الزامات جو انہوں نے عمران خان پر لگاۓ پاکستانی قوم کا دماغ گھمانے کے لیۓ ہی کافی تھے کہ اب کتاب کے بعد ریحام خان عمران خان کے متنازعہ بلیک بیری کے اسکرین شاٹ بھی سامنے لے آئيں

اییک جانب جب پاکستانی اپنے نۓ وزیر اعظم سے نۓ پاکستان کی امیدیں لگاۓ بیٹھے ہیں وہیں دوسری طرف ان کی سابقہ بیوی ان کی شہرت کو داغدار کرنے کے لیۓ ہر حربہ آزمانے کی کوششوں میں مصروف ہیں اس بار انہوں نے اس بلیک بیری فون کے اسکرین شاٹس کا سہارا لیا جو وہ بنی گالہ سے نکلتے ہوۓ چرا کر لے گئیں تھیں

 

جس میں انہوں نے 2015 میں عمران خان کی کسی خاتون کے ساتھ کی جانے والی گفتگو کاپی کی ہے اس کے ساتھ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ نمبر کے ذریعے جو بھی اس خاتون کو شناخت کرنا چاہے خود ہی کر لے

 

اس کے جواب میں ایک صاحب نے ان خاتون کو ڈھونڈ نکالا اور اس کے بعد ریحام خان کے ٹوئٹ کے جواب میں ٹوئٹ کر کے بتا دیا کہ یہ مریم نامی خاتون ہیں جو کہ عرب امارات میں رہتی ہیں ۔

 

ان کے اس ٹوئٹ کے جواب مین عمران خان کے چاہنے والے بھی چپ نہ رہے اور ریحام خان سے کہہ ڈالا کہ اپنا منہ بند ہی کر لیں آپ بنی گالہ کا وہ کچرا تھیں جس کو اٹھا کر باہر پھینک دیا گیا

 

تو کسی نے ریحام خان کو خاتون اول کے بجاۓ خاتون چول کا خطاب دے ڈالا اس کے ساتھ ساتھ ان کو ان کے ماضي کے کچھ ٹوئٹ یاد دلا دیۓ جب کہ وہ پاکستان کے وزیر اعظم کی خاتون اول اور پاکستانیوں کی ماں بننے جا رہی تھیں

 

اس موقعے پر کچھ لوگ ریحام خان کے اسکرین شاٹس دیکھ کر اتنے شکر گزار ہوۓ کہ بے ساختہ ان کو کامیابیوں کی دعاؤں سے نوازنے لگے

بہرحال ریحام خان کی کتاب کے فلاپ ہونے کے بعد جو لوگ سمجھ رہے تھے کہ یہ چیپٹر کلوز ہو چکا ہے ان لوگوں کو یہ اسکرین شاٹس منظر عام پر لا کر ریحام خان نے یہ بتا دیا ہے کہ پکچر ابھی باقی ہے

To Top