سسرالیوں نے بہو کو آٹھویں منزل سے چار ماہ کے بچے کے ساتھ کیوں دھکا دے کر مار ڈالا ۔وجہ ایسی کہ سب توبہ توبہ کرنے لگے

سسرالیوں نے بہو کو آٹھویں منزل سے چار ماہ کے بچے کے ساتھ کیوں دھکا دے کر مار ڈالا ۔وجہ ایسی کہ سب توبہ توبہ کرنے لگے

انسانی رشتوں کی کہانی بھی عجیب ہوتی ہے ۔ کبھی تو ایثار وقربانی کی ایسی مثالیں قائم کر ڈالتے ہیں کہ جن کو انسانی عقل تسلیم کرنے سے قاصر ہوتی ہے اور کبھی ظلم و بربریت کی ایسی داستان رقم کر ڈالتے ہیں کہ جس کو دیکھ کر وحشت اور حیوانیت بھی توبہ توبہ کرنے لگتی ہے ۔

کراچی کے علاقے دہلی کالونی میں اس محترم مہینے میں بھی ایک عورت نے دوسری عورت کے ساتھ وہ سلوک کر ڈالا جس کے بارے میں سن کر انسانیت شرما کر رہ گئی ۔ اس ظلم کا نشانہ صرف اپنی بہو ہی کو نہیں بنایا گیا بلکہ اس ظلم کا شکار اپنا سگا پوتا بھی بن گیا جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انسان کو اصل سے زیادہ سود عزیز ہوتا ہے

سسرال والوں  کے مطابق کراچی کے علاقے میں بائیس سالہ رمشہ نے پسند کی شادی کی تھی جس کے نتیجے میں اس کا ایک چار ماہ کا بیٹا بھی تھا ۔ اس کا شوہر روزگار کے لیۓ دبئی میں ہوتا تھا جب کہ وہ یہاں سسرال میں اپنی ساس کے ساتھ رہتی تھی ۔گزشتہ دن اچانک اس نے اپنے فلیٹ سے جو کہ آٹھویں منزل پر تھا چھلانگ لگا دی ۔ اس دوران اس کی گود میں اس کا چار ماہ کا بیٹا بھی تھا

سسرالیوں کے ہاتھوں ایک اور حوا کی بیٹی کا قتل، بائیس سالہ رمشا کو عمارت کی آٹھویں منزل سے اس کے شیر خوار بچے سمیت پھینک دیا گیا

سسرالیوں کے ہاتھوں ایک اور حوا کی بیٹی کا قتل، بائیس سالہ رمشا کو عمارت کی آٹھویں منزل سے اس کے شیر خوار بچے سمیت پھینک دیا گیا

Posted by Dunya News on Wednesday, May 23, 2018

دونوں ماں بیٹے نیچے گرتے ہی ہلاک ہو گۓ ابتدائی تفتیش میں اس کے سسرال والوں کا یہ کہنا تھا کہ رمشہ نے آٹھویں منزل سے چھلانگ لگا کر خودکشی کر لی اس موقع پر جب پولیس نے تحقیقات کی تو انہیں پڑوس کی ایک عورت نے بتایا کہ رمشہ جب نیچے گری اس وقت مرنے سے قبل اس نے اپنے آخری بیان میں یہ بتایا تھا کہ اس کو اس کے معصوم بچے کے ہمراہ اس کی ساس نے نیچے گرایا ہے

 

تاہم اس حوالے سے پولیس کا بھی یہی کہنا تھا کہ رمشہ کے جسم پر تشدد کے نشان موجود ہیں جو کہ کسی خودکشی کرنے والے کے جسم پر نہیں ہوتے اس کے علاوہ اس کی گردن پر رسی کے نشانات بھی موجود ہیں جیسے کسی نے اس کا گلا گھونٹنے کی کوشش کی ہے پولیس نے ابتدائی تفتیش کے لیۓ رمشہ کے جیٹھ اور اس کی ساس کو گرفتار کر لیا ہے

ابھی اس حوالے سے تفتیش جاری ہے باقی تمام حالات سے پردہ رمشہ کے شوہر کےدبئی سے آنے کے بعد ہی اٹھ سکے گا مگر رمشہ کے والد نے اس پڑوسی عورت کی گواہی کی بنیاد پر رمشہ کے سسرال والوں کے خلاف پرچہ کٹوا دیا ہے

To Top