گجرانوالہ میں معصوم بچیوں کی برہنہ جنسی زيادتی کی ویڈیو بنا کر وائرل کرنے والے بے نقاب ۔ہولناک انکشافات ہو گۓ

گجرانوالہ میں معصوم بچیوں کی برہنہ جنسی زيادتی کی ویڈیو بنا کر وائرل کرنے والے بے نقاب ۔ہولناک انکشافات ہو گۓ

زینب کے ساتھ ہونے والے جنسی زیادتی کے واقعے اور اس کے بعد اس کے بہیمانہ قتل نے پوری قوم کو لرزا کر رکھ دیا تھا ۔ اگرچے اس کے قاتل عمران کی پھانسی کا فیصلہ آچکا ہے مگر پھر بھی زینب کے ساتھ ہونے والی زيادتی اور اس کو جس انداز میں قتل کیا گیا اس نے لوگوں کے دلوں میں بہت سارے سوال اٹھا دیۓ ہیں ۔

کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ اس قسم کی وارداتوں کے پیچھے کوئی ایسا گروپ ملوث ہے جو کہ ایسی گھناونی حرکتوں کی ویڈیو کو ڈارک ویب پر اپ لوڈ کر کے پیسے کماتے ہیں ۔قصور میں معصوم بچیوں کے ساتھص ہونے والی جنسی زیادتیوں  اور اس کے قتل کے بعد گجرانوالہ کے علاقے میں بھی اس وقت تشویش کی لہر دوڑ گئی جب علاقے کے لوگوں میں معھوم بچیوں کے ساتھ ہونے والی جنسی زیادتی کی ویڈیوز وائرل ہونے لگیں ۔

گوجرانوالہ: بچیوں کے ساتھ زیادتی اور ویڈیوز بنانے کا انکشاف

جعلی پیر گوجرانوالہ میں بچیوں کے ساتھ زیادتی اور پھر ان کی ویڈیوز بناکر پیچنے میں ملوث پایا گیا۔ ہولناک انکشاف دیکھیے اس ویڈیو میں

Posted by Dunya News on Thursday, March 15, 2018

علاقہ مکینوں نے ان ویڈیوز کی شکایت جب حکام سے کی تو حکام نے اس سارے معاملے کی تحقیق جدید سائنسی بنیادوں پر کی اس کے بعد ہونے والے انکشافات انتہائی ہوشربا تھا پولیس حکام نے اس معاملے میں ملوث دو افراد کو گرفتار کیا جس میں سے ملزم راشد ایک ویڈیو سنٹر کا مالک ہے جب کہ دوسرا ملزم طارق شاہ ایک جعلی پیر ہے ۔

یہ دونوں افراد بچیوں سے ہونے والی جنسی زیادتیوں کی ویڈیوز پھیلاتے تھے تاہم ابھی تک اس بارے میں تحقیقات کی جارہی ہیں کہ اس سارے معاملے میں ان کے ساتھ کون کون شریک ہے نیز پولیس اس امر کی بھی تحقیق کر ہی ہے کہ کیا یہ ان ویڈیوز کے ذریعے لڑکیوں کو بلیک میل بھی کیا جاتا ہے ؟

اس کے علاوہ اس بات کی بھی تحققیق کی جا رہی ہے کہ کیا یہ ویڈیوز بنا کر بین الاقوامی طور پر ڈارک ویب پر فروخت تو نہیں کی جا رہی ہیں ان سارے معاملات میں تحقیقات ابھی جاری ہیں اور خصوصی تحقیقی ٹیم خفیہ مقام پر اس سارے معاملے کی تحقیق  کر رہی ہے ۔

To Top